سو سال پرانا گورنمنٹ ہائی سکول ٹاہلی منگینی سہولیات کا منتظر

چنیوٹ Ú©ÛŒ تحصیل بھوآنہ Ú©Û’ نواح میں بیالیس کنال رقبہ پر قائم گورنمنٹ ہائی سکول ٹاہلی منگینی ایک تاریخی درسگاہ ہے جو اپنے قیام Ú©Û’ سو سال پورے کر Ú†Ú©ÛŒ ہے۔نوے سالہ سید نذر حسین شاہ سکول Ú©ÛŒ تاریخ Ú©Û’ بارے میں بتاتے ہیں کہ مارچ 1916Ø¡ میں اس وقت Ú©ÛŒ بااثر شخصیات حاجی محمود خان چدھڑ، بہادر خان چدھڑ، بھائی خان چدھڑ اور دیگر معززین Ù†Û’ یہاں ایک سایہ دار جگہ بنا کر علاقے Ú©Û’ بچوں Ú©ÛŒ تعلیم Ùˆ تربیت Ú©Û’ لیے ایک پرائمری سکول Ú©ÛŒ بنیاد رکھی تھی سی فو Ù¹ÛŒ سیون نیوز ۔سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ چونکہ یہ سکول دو دیہات ٹاہلی رنگ شاہ اور منگینی Ú©Û’ درمیان واقع ہے اس لیے اسے ٹاہلی منگینی سکول کہا جاتا ہے۔ان Ú©Û’ مطابق ‘قیام پاکستان Ú©Û’ بعد 1974Ø¡ میں اس سکول Ú©Ùˆ Ù…ÚˆÙ„ اور پھر اس Ú©ÛŒ بہترین کارکردگی Ú©Û’ باعث 1984Ø¡ میں اسے ہائی سکول کا درجہ دے دیا گیا تھا۔’سید محمد علی شاہ ٹاہلی Ú©Û’ رہائشی ہیں جو سکول Ú©Û’ سابق طالب علم ہونے Ú©Û’ ساتھ ساتھ یہاں بطور استاد بھی فرایض سرانجام دے Ú†Ú©Û’ ہیں۔ان Ú©Û’ بقول ‘اس سکول Ú©ÛŒ نمایاں کارکردگی میں محنتی اور دیانت دار اساتذہ کا بہت عمل دخل رہا ہے اور یہاں سے فارغ ہونے والے طلباء بھی یہاں پر اساتذہ Ú©ÛŒ صورت میں اپنی خدمات پیش کرتے رہے ہیں جن میں سے ایک میں خود بھی ہوں۔’انھوں Ù†Û’ بتایا کہ کہ ٹاہلی منگینی دونوں ہی پرانی آبادیاں ہیں جہاں پر سادات اور چدھڑ برادری کا عمل دخل ہمیشہ زیادہ رہا ہے جبکہ سکول کا تعلیمی ریکارڈ ہمیشہ ہی شاندار رہا ہے۔’اس سال کلاس نہم Ú©Û’ بورڈ امتحانات میں سکول Ú©Û’ طالب علم طاہر عباس Ù†Û’ 488 نمبر Ù„Û’ کر ضلع بھر میں پہلی پوزیشن حاصل Ú©ÛŒ ہے جن Ú©ÛŒ حوصلہ افزائی Ú©Û’ لیے انعام بھی دیا گیا ہے۔’حافظ محمود اصغر سکول میں کلاس نہم Ú©Û’ انچارج ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ سکول میں اس وقت ساڑھے سات سو سے زائد طلباء زیر تعلیم ہیں جبکہ اس Ú©ÛŒ عمارت چودہ کمروں پر مشتمل ہے لیکن یہاں سہولیات بہت Ú©Ù… ہیں۔’سکول میں کمروں Ú©ÛŒ تعداد بہت Ú©Ù… ہے اور جو ہیں ان میں سے بھی زیادہ تر خستہ حالی کا شکار ہیں اس Ú©Û’ علاوہ سٹاف Ú©ÛŒ Ú©Ù…ÛŒ اور سائنس لیب نہ ہونے Ú©Û’ باعث قیمتی سامان الماریوں میں پڑا ضائع ہو رہا ہے۔’وہ بتاتے ہیں کہ سکول میں لائبریری Ú©ÛŒ سہولت نہ ہونے Ú©ÛŒ وجہ سے دوہزار بہترین کتب خراب ہونے کا خدشہ ہے۔’کمروں Ú©ÛŒ Ú©Ù…ÛŒ اور خستہ حالی Ú©ÛŒ وجہ سے دوران بارش پرائمری درجہ Ú©Û’ طلباء Ú©Ùˆ Ú©Ú¾Ù„Û’ آسمان Ú©Û’ نیچے ہی بیٹھنا پڑتا ہے جو کہ انتہائی پریشانی کا باعث ہے۔’ان Ú©Û’ مطابق سکول میں اس وقت Ú©Ù„ انیس اساتذہ تدریس Ú©Û’ فرائض سر اجنام دے رہے ہیں جن میں سے چار ہائی ØŒ سات Ù…ÚˆÙ„ اور آٹھ پرائمری حصہ میں تعینات ہیں لیکن پرائمری حصہ میں ابھی بھی پانچ مزید اساتذہ Ú©ÛŒ ضرورت ہے۔سینیئر ٹیچر حق نواز اس سکول میں گزشتہ پچیس سال سے پڑھا رہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ یہاں سے چار نسلیں تربیت حاصل کر Ú†Ú©ÛŒ ہیں جن میں بہت سے بڑے نام شامل ہیں لیکن ان تمام طالبعلموں کا ریکارڈ سکول Ú©Û’ پاس موجود نہیں ہے۔’اس سکول سے تعلیم حاصل کرنے والوں میں بہت سے سیاسی Ùˆ سماجی اور مذہبی لوگ شامل ہیں اس Ú©Û’ علاوہ موجودہ دور میں بھی اس سکول سے فارغ التحصیل بہت سے لوگ مختلف یونیورسٹیوں میں Ù¾ÛŒ ایچ ÚˆÛŒ Ú©ÛŒ تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔’مہر محمد ثقلین انور ایم Ù¾ÛŒ اے Ùˆ صوبائی پارلیمانی سیکریٹری برائے مذہبی امور ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ یہ ایک قدیم سکول ہے اور اس Ú©ÛŒ حالت زار Ú©Û’ بارے میں انہیں پتا چلا ہے۔ان Ú©Û’ مطابق وہ اس ادارے Ú©Û’ مسائل Ú©Ùˆ حل کرنے Ú©ÛŒ بھرپور کوشش کریں Ú¯Û’ تاکہ یہ قدیم ادارہ مستقبل میں بھی اسی طرح اپنے فرائض احسن طریقے سے ادا کرتا رہے۔